August 7, 2017
2 تبصر ے

کامیابی

میں ایک کامیاب شحص ہوں۔ معاشی استحکام کے "سرٹیفیکیٹ" کے ساتھ حقیقی معنوں میں کامیاب۔ میرے پاس پیسہ ہے اور پیسہ کمانے کے کئی کارگر ذرائع ہیں۔ میں ایک کامیاب انسان ہوں یہ فقط میرے منہ کی بات نہیں ہے۔ میرے دوست، رشتہ دار، میرے جاننے والے سب میرے بارے میں یہ ہی رائے رکھتے ہیں۔ سب میرے مقام کو رشک سے دیکھتے ہیں اور سرد آہیں بھرتے ہیں۔ نوجوانوں کو میری مثالیں دی جاتی ہیں۔ باپ بیٹوں کو میری ترقی کی کہانیاں سنا کر ڈانٹتے ہیں۔ استاد میرے قصے سنا کر شاگردوں میں جذبہ کوشش پیدا کرتے ہیں اور خود حسد سے جلتے ہیں۔ رشتے دار میرے ساتھ مراسم بڑھانے کے لیے بے تاب رہتے ہیں۔ وہ میرے مقام سے کچھ ایسے مرعوب ہیں کہ میری تھوڑی سی توجہ انہیں بہت اہم محسوس ہوتی ہے، جبکہ میں، میں اپنے ارد گرد رہنے والے لوگوں سے بے نیاز آگے بڑھنے اور←  مزید پڑھیے
June 26, 2016
7 تبصر ے

کوانٹم مکینکس

اس موضوع سے جڑے پچیدہ ریاضیاتی پس منظر اور دقیق مساواتوں سے قطع نظر کچھ سادہ مثالوں سے "کوانٹم مکینکس" کو سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ لیکن اس سے بھی پہلے کچھ باتیں کلاسیکل مکینکس بارے۔ سترھویں صدی میں کلاسیکل مکینکس کی باقاعدہ ابتدا مشہور انگریز سائنسدان سر آئزک نیوٹن نے کی تھی، اسی حوالے سے اسے نیوٹن کی مکینکس بھی کہا جاتا ہے۔ طبعیات میں کلاسیکل مکینکس قوت اور اس کے تحت اجسام میں پیدا شدہ حرکات کا علم ہے، مثلاً کلاسیکل مکینکس کے فارمولوں سے ہم اجسام کی حرکت، رفتار، مقام، گردش، حرکت کے راستے وغیرہ کا ٹھیک ٹھیک حساب لگا سکتے ہیں۔ ہم حساب لگا سکتے ہیں کہ←  مزید پڑھیے
February 12, 2016
2 تبصر ے

ایٹم کی کہانی

ہائی سکول میں پڑھائی گئی سائنس میں ہمیں ایٹم اور اس کی ساخت بارے جو کچھ بھی پڑھایا جاتا ہے اور جو بھی تفصیلات بتائی جاتی ہیں وہ اگر ہمیں نہ بھی یاد ہوں تو کم از کم دو چیزیں ضرور ذہن میں رہ جاتی ہیں، اوّل لفظ "ایٹم" اور دوسرا اس سے جڑا یہ تصور کہ یہ بہت ہی چھوٹا ہوتا ہے۔ چلیں! ہم اپنی کہانی کا آغاز بھی انہی دو باتوں سے کرتے ہیں۔ لفظ ایٹم قدیم یونانیوں نے استعمال کیا تھا جس کا مطلب ہے ناقابل تقسیم، یعنی "وہ" جس سے چھوٹا کچھ نہ ہو۔ ہم سکول میں بھی یہ ہی پڑھتے ہیں کہ ایٹم مادے کا چھوٹے سے چھوٹا ذرہ ہوتا ہے جبکہ حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔ ہم ایٹم کو مادے کی اکائی تو کہہ سکتے ہیں مگر یہ ناقابل تقسیم یا مادے کا چھوٹے سے چھوٹا ذرہ نہیں ہوتا۔ ایٹم بھی کئی چھوٹے معلوم اور نامعملوم ذرات پر مشتمل ہوتا ہے اور اب تک ایٹم کے اندر دسیوں ذرے دریافت ہو چکے ہیں جبکہ←  مزید پڑھیے
October 5, 2015
4 تبصر ے

تلاش

بابا جی :- (جذبے کے ساتھ) "اُس کا ہر کام کرم، اُس کا ہر فعل عدل، دکھ بھی اُس کے، سکھ بھی اُس کے، میں بھی اُس کا تم بھی اُس کے"۔ میں:- "بابا جی! آپ زندگی کے ہر پہلو ہر معاملے کو خدا تعالٰی سے منسوب کرتے ہیں- آپ کی تعلیم ہمیشہ یہ ہی ہوتی ہے کہ خوشی، غم، صحت بیماری، امیری غریبی، عزت ذلت، زندگی موت سب اُسی کی طرف سے ہے۔ لیکن بابا جی! آپ اُن لوگوں کی زندگی بارے کیا کہیں گے جو اللہ تعالٰی کو سرے سے مانتے ہی نہی!" بابا جی:- (مسکرا کر) "بیٹا! انسان تو انسان اس کائنات میں کوئی ایسی چیز کوئی ایسا ذی روح نہیں ہے جو خدا کا انکار کر سکے"۔←  مزید پڑھیے
January 6, 2015
2 تبصر ے

وائلن

یہ اندازاً کوئی دس بارہ سال پرانا قصہ ہو گا جب میرے ایک بھتیجے کو یکا یک موسیقی کا شوق لاحق ہو گیا۔ فنون لطیفہ کی راہ پکڑنے کا یہ الہامی جذبہ اسقدر شدید تھا کہ اس نے نِری خواہش سے ایک قدم آگے بڑھنے کی ٹھانی اور موسیقی کے...←  مزید پڑھیے